free web stats
پہلہ صفحہ / بول نیوز / اسد عمر کی زیرصدارت بلک واٹر سپلائی کے حوالے سے اہم اجلاس

اسد عمر کی زیرصدارت بلک واٹر سپلائی کے حوالے سے اہم اجلاس


وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر کی زیرصدارت تربیلا ذخائر سے اسلام آباد اور راولپنڈی تک بلک واٹر سپلائی کے انعقاد کا جائزہ اجلاس منعقد ہوا۔

اجلاس میں ایم ایم پی سے تعلق رکھنے والے کنسلٹنٹس نے اجلاس کو بریفنگ دی گئی جبکہ پانی کی بلک ٹرانسمیشن کے ماسٹر پلاننگ کے لئے فزیبلٹی اسٹڈی کی موجودہ صورتحال کے بارے میں آگاہ کیا گیا۔

 بریفنگ کے دوران کہا گیا کہ کنسلٹنٹس کو اپنی رپورٹ  مکمل کرنے کے لیے سات ماہ  کا وقت دیا گیا ہے جبکہ انکی ٹیم نے وسط اکتوبر میں اپنے کام کا آٖغاز کر دیا ہے جبکہ اس منصوبے کے تحت تربیلا ڈیم میں انڈس ریور سسٹم سے اسلام آباد اور راولپنڈی سمیت دیگر شہروں تک پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے تقاصوں کو پورا کرنا ہے

بریفنگ کے دوران مزید کہا گیا کہ اس وقت جڑواں شہروں میں پانی کی طلب 440 ملین گیلن روزانہ  کی بنیاد پر ہے، جس میں سے نصف یعنی 220 ملین گیلن مختلف ذرائع سے مل رہا ہے جبکہ بقایا  220 ملین گیلن کا فرق اس منصوبے سے پورا ہوگا جس کو پورا کرنے کے لیے ہر ممکن وسائل بروکار لائے جا رہے ہیں

  اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر نے ایم ایم پی کو فزیبلٹی اسٹڈی کو تیز رفتاری سے مکمل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ سکریٹری منصوبہ بندی کو  زمین کے حصول سے متعلق صوبائی حکومت  سے رابطہ کرنے کی ہدایت، اعلامیہ زمین کے حصول  سے متعلق معملات کو حتمی شکل  جلد از جلد  دی جائے جبکہ منصوبے پر کام کے آغاز میں تاخیر سے بچا جا سکے

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر  نے سی ڈی اے کو  اپنی ٹیم میں پراجیکٹ مینجمنٹ ماہرین کی موجودگی کو یقینی بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ تربیلا سے آئی سی ٹی تک پانی کی دستیابی اور اسلام آباد اور راولپنڈی کے اس پانی میں حصے سے متعلق امور کی وضاحت حاصل کی جائے۔

اجلاس میں علی نواز اعوان ، سیکرٹری منصوبہ بندی ، ممبر انفراسٹرکچر ، وزارت داخلہ کے نمائندوں نے شرکت کی۔

خبرکا ذریعہ : بول نیوز اردو

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے