ٹی آر ٹی اردو - ترکی اچھے دنوں کا نہیں برے وقت کا بھی ساتھی ہے:وزیر دفاع thumbnail 4

ٹی آر ٹی اردو – ترکی اچھے دنوں کا نہیں برے وقت کا بھی ساتھی ہے:وزیر دفاع

وزیر دفاع نے کہا کہ لیبیا صرف لیبیائی عوام کا ہے اور ہم  لیبیا کی سالمیت کا احترام کرتے ہیں جبکہ ترک فوج، لیبیائی  افواج کو جدید صلاحیتیوں سے لیس کرنےاور ان کی تربیت کا فریضۃ جاری رکھےہوئے ہے۔

وزیر دفاع خلوصی آقار  اور ترک مسلح افواج کے سربراہ  جنرل یشار گولیر نے لیبیا میں متعین ترک فوجیوں سے ملاقات کی ۔

 آقار اور یشار نے لیبیائی مسلح افواج کے سربراہ جنرل محمد الحداد،مغربی کمان کے کمانڈرمیجر جنرل اسامہ جویلی اور طرابلس کمان کے کمانڈرمیجر جنرل عبدالباقی مروان  کے ہمراہ  ترک فوجیوں سے  خطاب کیا ۔

وزیر دفاع نے کہا کہ لیبیا صرف لیبیائی عوام کا ہے اور ہم  لیبیا کی سالمیت کا احترام کرتے ہیں، جب ترکی نےیہاں قدم رکھا تو جگہ جگہ مشکلات  در پیش تھیں جس کےحل کے لیے ہم نے شب و روز ایک کرتےہوئے بری،فضائی و بحری تربیت میں لیبیا کی مدد کی اور کافی دورس  نتائج حاصل کیے، یاد رہےکہ ترکی اچھے دنوں کا نہیں بلکہ برے وقت کا بھی ساتھی ہے اور ترک فوج، لیبیائی  افواج کو جدید صلاحیتیوں سے لیس کرنےاور ان کی تربیت کا فریضۃ جاری رکھےہوئے ہے۔

انہوں نے  کہا کہ لیبیا میں عبدالحمید الدبیبہ کی قیادت میں قومی اتحادی حکومت  کی حمایت ضروری ہے اور اس بات کی امید ہے کہ دسمبر میں ہونے والے انتخابات تک لیبیا میں امن و امان کو بحال رکھنے کی کوشش کی جائے جبکہ ترکی کی لیبیا میں موجودگی اس کے مفادات اور بحیرہ روم کے حقوق کے اعتبار سے بھی اہمیت کی حامل ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ  لیبیا کے ساتھ بحری اختیارات کے معاہدے کی بدولت ہم بحیرہ روم میں اپنی سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہیں جسے یونان کی طرف سے  فسخ کروانے کی ناکام کوشش بھی قابل مذمت ہے، ترکی مسائل کو عالمی قوانین ،بہتر ہمسائگی کے اصولوں اور مر امن مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کا خواہاں ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں